You are currently viewing Pink Salt ( گلابی نمک )

Pink Salt ( گلابی نمک )

Pink Salt ( گلابی نمک )

گلابی نمک یا پنک سالٹ، جسے ’ہمالین سالٹ‘ بھی کہا جاتا ہے، پاکستان میں جہلم سے کوہاٹ کے درمیان پہاڑی سلسلے میں پایا جاتا ہے۔

بہت سے لوگ دعویٰ کرتے ہیں کہ گلابی نمک معدنیات سے بھرپور ہوتا ہے اور صحت کے ناقابل یقین فوائد فراہم کرتا ہے۔یہ بھی کہا جاتا ہے کہ گلابی نمک عام طور پر استعمال کیے جانے والے سفید نمک سے زیادہ افادیت رکھتا ہے۔

چونکہ گلابی نمک کے بارے میں بہت کم تحقیقات کی گئی ہیں اس لیے کچھ لوگوں کا ماننا ہے کہ گلابی نمک کے بارے میں صحت کے یہ غیر معمولی دعوے قیاس آرائی کے علاوہ کچھ نہیں ہیں۔

غذائی ماہرین کے مطابق نمک ایک منرل ہے جس میں تقریباً 98 فیصد تک سوڈیم کلورائیڈ موجود ہوتا ہے، سفید نمک کو ٹیبل سالٹ کہا جاتا ہے جو کہ مارکیٹ میں با آسانی دستیاب ہے جبکہ پنک سالٹ یعنی گلابی نمک کو ہیمالین نمک بھی کہا جاتا ہے۔

سفید اور گلابی نمک میں کیا فرق ہے ؟

سفید نمک

نمک میں موجود سوڈیم ہمارے جسم کے لیے ایک ضروری منرل ہے جو کہ سفید نمک میں بڑی مقدار میں پایا جاتا ہے، سوڈیم جسم میں اعضاء کی کارکردگی متوازن رکھنے، اعصاب کے نظام اور پٹھوں کو بنانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے مگر اس کا زیادہ استعمال بلڈ پریشر اور دل کی بیماریوں کا سبب بھی بنتا ہے، اس کے زیادہ استعمال سے گریز کرنا چاہیے۔

گلابی، پنک یا ہیمالین نمک

دنیا میں نمک کی دوسری بڑی کان ’کھیورا‘ پاکستان میں موجود ہے، اس کان میں  پنک سالٹ کے بڑے ذخائر پائے جاتے ہیں، پنک نمک کو کان سے نکالنے کے بعد ریفائن نہیں کیا جاتا اور نہ ہی اس میں کوئی اضافی اجزاء یا منرلز شامل کیے جاتے ہیں۔

گلابی نمک میں منرلز اور خاص طور پر آئرن زیادہ پایا جاتا ہے، ماہرین کا کہنا ہے کہ اس نمک میں 84 منرلز پائے جاتے ہیں، یہ نمک بھی زیادہ تر سوڈیم کلورائیڈ پر ہی مبنی ہوتا ہے لیکن سفید نمک کی نسبت اس میں سوڈیم کی مقدار کم پائی جاتی ہے۔

پنک نمک کے صحت پر فوائد

گلابی نمک پھیپھڑوں اور ناک کے نظام سے متعلق شکایت دور کرتا ہے، وزن میں کمی لاتا ہے، بڑھتی عمر کے اثرات کے عمل کی رفتار کو آہستہ کرتا ہے،  خون میں شوگر لیول کو متوازن بناتا ہے۔

پنک نمک کے استعمال سے جسم میں نمی اور الیکٹرولائٹ کا توازن برقرار رہتا ہے، پٹھو ں کے درد سے نجات  ملتی ہے، ہارمون میں توازن اور بلڈپریشر بھی کنٹرول رہتا ہے۔

غذائی ماہرین کے مطابق پنک نمک اعتدال کے ساتھ استعمال کیاجائے تو اس کے صحت پر کوئی منفی اثرات نہیں آتے جبکہ اس کے استعمال سے پیٹ، گردے، پھیپھڑے اور دیگر اندرونی اعضاء کی صحت بہتر رہتی ہے۔

Pink Salt ( گلابی نمک )

Pink Salt ( گلابی نمک )

Pink salt, also known as ‘Himalayan salt’, is found in the mountain range between Jhelum and Kohat in Pakistan.

Many people claim that pink salt is rich in minerals and provides incredible health benefits. It is also said that pink salt is more beneficial than the commonly used white salt.
Since little research has been done on pink salt, some people believe that these unusual health claims about pink salt are nothing more than speculation.

What is the difference between white and pink salt?

White salt

The sodium in salt is an essential mineral for our body which is found in large amounts in white salt. Use also causes high blood pressure and heart disease, and overuse should be avoided.

Pink, pink or Himalayan salt

The second-largest salt mine in the world, Khiura, is located in Pakistan. The mine has large deposits of Punk Salt. Pink salt is not refined after extraction from the mine and does not contain any additional ingredients or minerals. Are done.

Pink salt is rich in minerals, especially iron. Experts say that this salt contains 84 minerals. This salt is also mostly based on sodium chloride, but it has a higher sodium content than white salt. Rarely found.

Health Benefits of Punk Salt

Pink salt relieves complaints about the lungs and nasal system, reduces weight, slows down the effects of aging, and balances blood sugar levels.

The use of pink salt maintains the balance of moisture and electrolytes in the body, relieves muscle pain, balances hormones, and also controls blood pressure.

According to nutritionists, if pink salt is used in moderation, it has no adverse effects on health.

Visit My Youtube Channel.

Leave a Reply